پاکستان بھر کی جیلوں میں قیدیوں کے لئے بڑی خبرآگئی

835

اسلام آباد( نیوزالرٹ)علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی نے پاکستان بھر کی جیلوں میں قید یوںکے لئے مفت تعلیمی پالیسی تشکیل دی ہے تاکہ سزا مکمل ہونے کے بعد وہ پرامن اور عزت کی زندگی گزارسکیں اور معاشرے کے لئے مفید شہری بن سکیں، یونیورسٹی کے شعبہ داخلہ نے ملک بھر کی جیلوں میں قیدیوں کو بی اے سطح تک مفت تعلیم فراہم کرنے کے لئے داخلہ فارم اور پراسپکٹس تمام جیلوں کو ارسال کردئیے ہیں،
یہ فارم تمام قیدیوں میں مفت تقسیم کئے جائیں گے، قیدیوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ داخلہ فارم کو مکمل کرکے 28ِستمبر تک جمع کرائیں، یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی قیدیوں کی تعلیم میں گہری دلچسپی لے رہے ہیں، انہوں نے ملک بھر کی جیلوں میں قیدیوں کے لئے یونیورسٹی کے مفت تعلیمی منصوبے میں مزید سہولیات کا اضافہ کیا ہے اور منصوبے پر عمل درآمد کو یقینی بنانے کے لئے بذات خود سینٹرل جیل راولپنڈی ،لاہور ،کوئٹہ اور ملتان کا دورہ کیا اور ہر جیل میں موجود قیدیوں سے ملاقاتیں کیں اور انہیں سلسلہ تعلیم شروع کرنے کی جانب راغب کرنے کی سنجیدہ کوشش کی، ڈاکٹر شاہد صدیقی کے مطابق منصوبے کا اصل مقصد زیادہ سے زیادہ قیدیوں کو تعلیمی نیٹ میں لانا ہے تاکہ سزا مکمل ہونے کے بعد وہ پرامن اور عزت کی زندگی گزارسکیں اور معاشرے کے لئے مفید شہری بن سکیں، منصوبے کے تحت قیدیوں کو داخلہ فارم اور پراسپکٹس جیل کے اندر ہی مفت فراہم کئے جاتے ہیں اور ان کے لئے تدریسی ورکشاپس ،ٹیوٹوریل میٹنگز اور فائنل امتحانات بھی جیل کی حدود کے اندر ہی منعقدکئے جائیں گے، ڈاکٹر شاہد صدیقی نے کہا ہے کہ اس وقت پاکستان کی مختلف جیلوں میں 1000سے زائد قیدی یونیورسٹی سے تعلیم حاصل کررہے ہیں اور ہم زیادہ سے زیادہ قیدیوں کو تعلیمی نیٹ میں لانا چاہتے ہیں،یونیورسٹی کے فوکل پرسن زاہد مجید کے مطابق جیلوں کو ارسال کرنے والے تمام داخلہ فارمز پر “صرف قیدیوں کے لئے”کی مہر لگائی دی گئی ہے۔

جواب دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here