گلائیڈر اڑانا امریکی شہری کے لیے مشکل کا باعث بن گیا

برن(مانیٹرنگ ڈیسک) گلائیڈر اڑانا امریکی شہری کے لیے مشکل کا باعث بن گیا انسٹرکٹر کی کوتاہی کے باعث امریکی سیاح 4 ہزار فٹ کی بلندی سے گرتے گرتے بچا۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ امریکی ریاست فلوریڈا میں گاڑیوں کے پرزوں کی لین دین کرنے والے کریش گرسکی اپنی اہلیہ کے ہمراہ چھٹیاں گزارنے سویٹزرلینڈ گئے ہوئے تھے جہاں انہوں نے آسمان سے سوئیٹزر لینڈ کے خوبصورت نظارے کرنے کا فیصلہ کیا لیکن یہ حسین ایک خوفناک تجربے میں تبدیل ہوگیا۔ غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ کرس گُرسکی کی سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ انہوں نے اپنے انسٹرکٹر کے ہمراہ 4 ہزار فٹ بلند پہاڑ سے گلائیڈر(جہاز نماشے ) سے اڑان بھری لیکن انسٹرکٹر ان کی حفاظتی بیلٹ گلائیڈرمیں بھاندننا بھول گیا۔ سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ گرسکی دو منٹ تک گلائیڈر پر بغیر کسی سہارے لٹکے رہے اور پائلٹ نے بھی دو منٹ بعد محفوظ لینڈنگ کی۔ حادثے کا شکار امریکی شہری نے میڈیا کو بتایا کہ ’میں بس خود پر قابو پانے کی کوشش کررہا تھا، اپنے جان بچانے کےلیے گلائیڈر پر خود کو لٹکائے رکھنے کے لیے کوشاں تھا، میں نے نیچے دکھا اور اپنے بارے میں خیال آیا کہ میں موت کے منہ میں جارہا ہوں۔ گرسکی کا کہنا تھا کہ میرے دائیں ہاتھ کی گرفت پائلٹ کے کندھے پر کم ہوتی جارہی تھی جس کے باعث صورتحال مزید خوفناک ہورہی تھی۔ متاثرہ امریکی شہری کا کہنا تھا کہ اس خوفناک سفر میں پائلٹ کی بہت بڑی غلطی تھی جس نے میری حفاظتی بیلٹ گلائیڈر سے نہیں باندھی اور کچھ لمحوں بعد میں ایک ہاتھ کی مدد سے اڑ رہا تھا اور خوفناک سفر ختم ہونے بعد مجھے بائیں ہاتھ کی سرجری کروانی پڑی۔

جواب دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here