علاقائی تجارت کا فروغ عالمی مندی کو ختم کرسکتا ہے ، وزیر تجارت

پاکستان تجارتی سہولتوں کی فراہمی ، علاقائی رابطہ کاری اورتجارت میں اضافے کا علمبردار ہے نان ٹیرف رکاوٹوں کو دور کرنا حکومتوں کی اولین ترجیح ہونی چا ہیے ، سارک چیمبر کے وفد سے گفتگو
اسلام آباد(اے پی پی) وفاقی وزیر تجارت انجینئر خرم دستگیر خان نے کہا کہ عالمی تجار ت میں مندی کو علاقائی تجارت میں اضافے کے ذریعے دورکیا جا سکتا ہے ، پاکستان علاقائی تجارت میں اضافے ، تجارتی سہولتوں کی فراہمی اور علاقائی رابطہ کاری کا علمبردار ہے ، خطے میں تجارت میں اضافہ کیلئے نان ٹیرف رکاوٹوں کو دور کرنا حکومتوں کی اولین ترجیح ہونی چاہیے جس سے خطہ کے عوام بلا تفریق مستفید ہو سکیں، ان خیالات کا اظہار وفاقی وزیر نے پاکستان کے دورے پر آئے سارک چیمبرزکے وفد سے ملاقات کے دوران کیا، وفد کی صدارت چیمبر کے صدر سوراج ویدیا نے کی،اس موقع پر چیف ایگزیکٹو ٹڈاپ ایس ایم منیر اور فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس کے صدر رؤ ف عالم بھی موجود تھیں۔وفاقی وزیر نے گفتگو کے دوران کہا کہ سارک ممالک کے مابین تجارت دنیا کے دوسرے خطوں مثلاً یورپی یونین، آسیان جیسے خطوں کی باہمی تجارت کی نسبت انتہائی کم ہے ، علاقائی تجارت کی بدولت چھوٹی اور درمیانے درجے کی صنعتوں کے مالکان بھی اپنا مال آسانی سے برآمد کر سکتے ہیں۔

جواب دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here

83 + = 91