اوپن مارکیٹ ریٹس

ہمیں فالو کریں

1,071,158FansLike
10,017FollowersFollow
590,500FollowersFollow
217,388SubscribersSubscribe

آئی ایم ایف کو پتا نہیں وگرنہ قبروں پر بھی ٹیکس لگے، فاروق ایچ نائیک

سینیٹ کی قائمہ خزانہ کمیٹی کے اجلاس میں بھی بھاری ٹیکس کی گونج سنائی دی گئی۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس سینیٹر سلیم مانڈوی والا کی زیر صدارت ہوا۔

سینیٹر انوشے رحمان نے سوال کیا کہ کیا قبر پر ٹیکس لگے گا؟ اس کے بعد فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ وہ وقت دور نہیں جب قبر پر بھی ٹیکس لگے گا، حالانکہ آئی ایم ایف کو نہیں معلوم کہ کراچی میں قبریں کھودنے والوں پر بھی ٹیکس لگانا چاہیے۔

سینیٹر اخونزادہ چٹان نے سینیٹ کی فنانس کمیٹی میں تجاویز پیش کرتے ہوئے کہا کہ فاٹا اور پاٹا میں ٹیکس چھوٹ کا غلط استعمال کیا گیا ہے، ایف بی آر فاٹا اور پاٹا کے لیے ٹیکس چھوٹ کی مخالفت کرتا ہے، ان علاقوں کو انڈسٹری دیں، فاٹا و پاٹا کیلئے 5 سالہ کوئی منصوبہ ہونا چاہیے۔

سینیٹر اخونزادہ چٹان نے کہا کہ وہاں اسٹیل پر ٹیکس چھوٹ کی زیادتی ہے، فاٹا میں ان پٹ پر 6 فیصد کی بجائے 3 فیصد ٹیکس عائد کیا جائے۔

چیئرمین کمیٹی سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ ٹیکس استثنیٰ سے فاٹا کو کوئی فائدہ نہیں ہوتا اور فاٹا میں ٹیکس استثنیٰ سے چند لوگ مستفید ہوتے ہیں۔

latest urdu news