اوپن مارکیٹ ریٹس

ہمیں فالو کریں

1,072,831FansLike
10,015FollowersFollow
592,000FollowersFollow
217,388SubscribersSubscribe

الیکشن نہ بھی ہوتا تب بھی بجٹ ایسا ہی پیش کرتے: اسحاق ڈار

اسلام آباد : وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ الیکشن نہ بھی ہوتا تب بھی بجٹ ایسا ہی پیش کرتے۔

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کو بریفنگ کے دوران اسحاق ڈار بت کہا کہ بجٹ اسٹریٹیجی پیپر میں تاخیر کی وجہ عالمی ادارے( آئی ایم ایف) کے ساتھ بات چیت میں تاخیر تھی ، آئی ایم ایف نے بیرونی فنانسگ کی شرائط رکھی جسے پورا کر رہے ہیں، تالی دونوں ہاتھوں سے بجتی ہے ، تما م انتظامات کر دیے گئے ہیں ، ایک گیس پائپ لائن کا اثاثہ 50 ارب ڈالر کا پاکستان کے پاس ہے جب کہ ریکوڈک سے 6 ہزار ارب ڈالر حاصل کیے جا سکتےہیں ۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ الیکشن نہ بھی ہوتا ، تب بھی بجٹ ایسا ہی پیش کرتے ، بجٹ میں 223 روپے کے ٹیکس اقدامات کیے گئے، جس میں آئی ٹی سیکٹر ایم ایز پر توجہ د ی، سی پی آئی 29 فیصد اور کور انفلیشن 20 فیصد کے لگ بھگ ہے۔

وزیرخزانہ کاکہنا تھا کہ سرکاری ملازمین سب سے زیادہ پسا ہوا طبقہ ہے ، موجودہ ٹیکس دہندگان پر کم سے کم بوجھ ڈالنے کی کوشش کی ہے ۔

نان فائلر پر 6.0فیصد و د ہولڈنگ ٹیکس معیشت کو دستازیزی کرنے کیلئے لگایا گیا ہے،5.3 شرح نمو حاصل کی جاسکتی ہے، مہنگائی اور شرح نمو کے حساب سے ٹیکس کا ٹارگٹ رکھا جاتا ہے۔

اسحاق ڈارنے یہ کہا کہ کراچی پورٹ پر کنٹینرز کی کلیئرنس میں تاخیر پر چیئر مین ایف بی آر سے رپورٹ طلب کر لیا،سمگلنگ کی روک تھام کیلئے اقدامات کیے ہیں، اسمگلنگ کم ضرورہو ئی ہے مگر ابھی ختم نہیں ہو ئی، اسمگلنگ کی روک تھام کیلئے ایکشن لے رہے ہیں، 5 ارب روپے مالیت کی چینی قبضے میں لی گئی ہے ۔

اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ غیر معمولی منافع پر ٹیکس سے متعلق ترمیم کی گئی ہے ، وفاقی حکومت نے اس پر قانون شامل کیا ہے اور وہی تناسب کا فیصلہ کرے گی، 99 ڈی کے قانون کے تحت 50 فیصد تک ٹیکس غیر معمولی منافع پر لیا جائے گا۔  

اسحاق ڈار نے کہا کہ چین سے ایک ارب ڈالر آج یا سوموار کو آجائیں گے جو ہم نے قرض واپس کیا وہ دوبارہ مل رہا ہے ، چین کے ساتھ ایک ارب ڈالر پر گفت و شنید مکمل ہو چکی ہے ، بینک آف چائنہ کے ساتھ بھی 30 کروڑ ڈالر پر بات چیت چل رہی ہے ، چین کے سواپ معائدے کے تحت بھی ڈالرز آئیںگے ۔