اوپن مارکیٹ ریٹس

ہمیں فالو کریں

1,073,563FansLike
10,013FollowersFollow
592,200FollowersFollow
217,388SubscribersSubscribe

پیپلزپارٹی کا مطالبہ منظور،سیلاب متاثرین کیلئے 12ارب روپےکی منظوری

وفاقی حکومت نے پیپلزپارٹی کی بجٹ منظوری کے لیے عائد کی گئی شرط کو منظور کرتے ہوئے سیلاب متاثرین کے لیے مزید 12 ارب روپے کی منظوری دے دی۔

قومی اسمبلی میں بجٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ سیلاب متاثرین کا قومی خزانے پر حق ہے اور مستحقین کی مدد حکومت کی ذمہ داری ہے۔
انہوں نے کہا کہ سیلاب متاثرین کی مکمل بحالی کے لیے 16.3 ارب ڈالرز کی ضرورت ہے۔

وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ سندھ کے سیلاب متاثرین کی بحالی کے لیے 50 ارب روپے کے فنڈز کی ضرورت ہے جس میں سے 25 ارب کے فنڈز وفاق دے گا۔

آئی ایم ایف سے ڈیل کے متعلق سوال،اسحاق ڈارنے صحافی کا موبائل چھین لیا

انہوں نے کہا کہ حکومت نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے فنڈز میں نمایاں اضافہ کیا ہے اور اب اسے ڈھائی سو سے 450 ارب تک بڑھانے جارہے ہیں، اچھے کام کی نیت ہو تو قدرت بھی مدد کرتی ہے، مستحق خواتین کی مالی امداد ہماری ذمہ داری ہے۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ سیلاب متاثرین کیلئے 80 ارب روپے تقسیم کیے گئے، سیلاب سے پاکستان کو 30 ارب ڈالر کا نقصان ہوا، 100 ارب روپے کا فنڈ سیلاب ریسکیو اینڈ ریلیف کیلئے چاہیے تھا، این ڈی ایم اے اپنے اسٹاک سے استعمال کیے۔ این ڈی ایم اے کے لیے پچھلے دو ہفتوں میں 12 ارب گرانٹ کی ای سی سی نے منظوری دی ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ سیلاب کے بعد ایک باڈی بنائی گئی تھی، جس نے اپنی رپورٹ میں بتایا تھا کہ سیلاب کی وجہ سے 30 ارب ڈالرز کا نقصان ہوا، یہ طے پایا ہے کہ 16.3 عرب سے متعلق اگلے چار سال کے لیے ماسٹر پلان بنایا جائے گا۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ بجٹ کے بعد 15 جولائی تک ایک ماسٹر پلان بنایا جائے گا، 16.3 ارب ڈالر میں سے آدھی پلیجز ہونگی اور آدھا ہم نے خود انتظام کرنا ہے، جو آٹھ ارب ڈالر ہم نے ارینج کرنا ہے اس میں سے آدھا وفاق کرے گا اور آدھا صوبے کریں گے۔

اسحاق ڈار نے کاہ کہ سندھ. حکومت نے سیلاب متاثرین کیلئےفلڈ ایمرجنسی ہاؤسنگ منصوبہ 727 ملین ڈالر کی لاگت سے شروع کیا ہے، منصوبے کیلئےآئندہ مالی سال کیلئے 50 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں، جس میں سے 25 ارب کا حصہ وفاق ادا کرے گا۔