کرنسی کنورٹر

اوپن مارکیٹ ریٹس

ہمیں فالو کریں

756,884FansLike
9,838FollowersFollow
533,700FollowersFollow
145,417SubscribersSubscribe

بلوچ طلبہ بازیاب نہ ہوئے تو وزیراعظم اور وزیرداخلہ پر پرچہ کٹے گا: ہائیکورٹ

اسلام آباد ہائیکورٹ نے تمام لاپتہ بلوچ طلبہ کو 10 جنوری تک بازیاب کرانے کا حکم دے دیا۔

کیس کی سماعت کے دوران جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیے کہ اگر لاپتہ افراد بازیاب نہ ہوئے وزیراعظم اور وزیر داخلہ کے خلاف ایف آئی آر کا حکم دوں گا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس محسن اختر کیانی نے بلوچ طلبہ گمشدگی کیس کی سماعت کی۔

حکومت کا 10 ہزار طلبہ کو الیکٹرک بائیکس دینے کا فیصلہ

اٹارنی جنرل منصور اعوان نے بتایا کہ 22 بلوچ طلبہ کو بازیاب کرا لیا گیا ہے، وہ گھر پہنچ چکے ہیں، 28 بلوچ اب بھی لاپتہ ہیں، تمام لاپتہ افراد کوبازیاب کرانے کی کوششیں کریں گے۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیے کہ سادہ سی بات ہے کہ بنیادی انسانی حقوق کا معاملہ ہے۔

جوبھی لاپتہ شخص بازیاب ہوتا ہے وہ آکرکہتا ہے میں کیس کی پیروی نہیں کرناچاہتا۔

نگران وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے کہاکہ بہت سی مثالیں موجود ہیں کہ یہاں سے لوگ افغانستان چلے گئے۔

انہوں نے کہا کہ بہت سارے کیسز ایسے بھی ہیں جن میں سکیورٹی فورسز کے ساتھ لڑتے ہوئے مارے گئے،ہماری ذمہ داری ہے اورہم ڈھونڈیں گے۔

جسٹس محسن اخترکیانی نے وارننگ دی کہ اگر اگلی تاریخ پر لاپتہ طلبہ بازیاب نہ ہوئے تو وزیر اعظم، وزیر داخلہ، سیکرٹری دفاع و داخلہ کے خلاف پرچہ کاٹنے کا حکم دوں گا اور آپ سب کو گھر جانا ہو گا۔

کیس کی مزید سماعت 10 جنوری تک ملتوی کردی گئی ۔