ناقص انتظامات پر ڈپٹی کمشنر اور ڈی پی او سیالکوٹ عہدوں سے فارغ

سیالکوٹ: وزیر اعظم عمران خان کے دورہ سیالکوٹ کے دوران وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ناقص انتظامات پر ڈپٹی کمشنر محمد طاہر وٹو اور ڈی پی او سیالکوٹ عبد الغفار قیصرانی کو عہدوں سے فارغ کر دیا۔
ذرائع کے مطابق وزیراعلی نے پروٹوکول کے بغیر تحریک انصاف سنٹرل پنجاب کے صدر عمر ڈار اور صوبائی وزیر خصو صی ایجوکیشن اخلاق احمد چودھری کے ہمراہ سیالکوٹ شہر کا اچانک دورہ کیا اور اس دوران ایمن آباد روڈ سے سرکلر روڈ اور خواجہ صفدر روڈ پر ٹریفک بری طرح جام تھی اور ہر طرف گندگی پھیلی ہوئی تھی جس کی بنا پر دونوں افسر وں کو عہدوں سے ہٹایا گیا۔محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی نے تقرر و تبادلہ کا نوٹیفکیشن جاری کرتے ہوئے 18 گریڈ کے افسر محمد طاہر وٹو کو محکمہ سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن میں رپورٹ کرنے کا حکم دے دیا۔ ڈی پی او عبدالغفار قیصرانی کو ناقص سکیورٹی انتظامات پر او ایس ڈی کیا گیا۔ایک اور رپورٹ کے مطابق وزیرا عظم عمران خان کی کرتارپور تقریب سے سیالکوٹ واپسی پر روانگی کے وقت چیف سیکرٹری پنجاب اور آئی جی پنجاب جاوید سلیمی وفاقی حکومت کی طرف سے فراہم کئے گئے 2 ہیلی کاپٹروں میں سے ایک میں سوار ہوگئے حالانکہ انہوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب کے ہیلی کاپٹر میں سوار ہونا تھا جس پر پائلٹ نے آئی جی پنجاب سے کہا کہ وہ ہیلی کاپٹر مکینک کی نشست پر بیٹھ گئے ہیں ہیلی کاپٹر میں پہلے ہی زیادہ مسافر سوار ہیں ایسی صورت میں مکینک کے بغیر ہیلی کاپٹر اڑایا نہیں جاسکتا۔جس پر آئی جی پنجاب، چیف سیکرٹری اور سیکرٹری داخلہ ہیلی کاپٹر سے اتر گئے اور آئی جی پنجاب فون پر مصروف ہو گئے اور ڈی سی او اور ڈی پی او سیالکوٹ پر برہم ہوئے اور کہا کہ ان دونوں نے ان کو ہیلی کاپٹر بارے آگاہ نہیں کیا کہ وہ پنجاب حکومت کی بجائے وفاقی حکومت کے ہیلی کاپٹر میں سوار ہو رہے ہیں بعد ازاں دونوں افسروں کو عہدوں سے ہٹا دیا گیا۔

جواب دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here

64 + = 73