معیشت اور ٹیکنالوجی کیساتھ ثقافتوں اور تہذیبوں کو بھی مضبوط ہونا چاہیئے

چینی صدر شی جن پنگ نے کہا ہے کہ عالمی چیلنچز سے نمٹنے کے لیے ثقافتوں اور تہذیبوں کو مضبوط ہونا چاہیئے۔ایشیائی تہذیب و تمدن کی مذاکراتی کانفرنس کا افتتاح بدھکو بیجنگ میں ہوا۔ چین کے صدر نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہمیں انسانیت کو درپیش چیلنچز سے مشترکہ طور پر نمٹنا چاہیئے،اس مقابلے کے لئے نہ صرف معیشت اور ٹیکنالوجی کو توانا ہونا چاہیئے بلکہ ثقافتوں اور تہذیبوں کو بھی مضبوط ہونا چاہیئے۔انہوں نے کہا کہ اس وقت دنیا میں مختلف حوالوں سے ترقی ہورہی ہے۔ یہ ترقی کثیر الطرفہ ہے، اس کا تعلق اقتصادی عالمگیریت سے ہے اور سماجی نظام بھی ترقی کررہے ہیں۔انسانی معاشرہ پرامید ہے۔ لیکن اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے نشاندہی کی کہ عالمی صورتحال میں عدم استحکام اور بے یقینی مسلسل بڑھ رہی ہے۔ انسانیت کو درپیش چیلنچز بھی مسلسل طور پر سنگین ہورہے ہیں۔ ان کے خیال میں ایشیائی تہذیب و تمدن کی مذاکراتی کانفرنس ایشیا نیز دنیا کی مختلف تہذیبوں کے درمیان برابری کی سطح پر بات چیت،تبادلوں اور ایک دوسرے کے تجربات سے سیکھنے کے لیے ایک نیا پلیٹ فارم فراہم کرے گی۔

جواب دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here

+ 30 = 33